ایک مسجد کے بچے ہوئے رقم کو دوسری مسجد میں صرف کرنا

شیر کریں اور علم دین کو عام کریں

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
حضرات علمائے کرام ۔۔
کوئی اللہ کے بندہ ‌نے ایک مکمل مسجد بنانے کے لئے پیسے دیے تھے،مسجد مکمل ہوگیا،لیکن کچھ رقم بچ گئے ۔اب اس بچے ہوئے رقم کو دوسری ضرورت مند مسجد کی تعمیر کے کام میں صرف کرنے میں شرعی کوئی حرج ہے ؟براہ مہربانی مکمل مفصل مدلل رہنمائی فرمائیں ۔
ولی الرحمان ہوجایٔ آسام

وعلیکم السلام ورحمۃاللہ وبرکاتہ
بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
الجواب وبہ التوفیق :-
صورت مسئولہ میں اگر مذکورہ مسجد میں فی الحال یا آئندہ رقم کی ضرورت نہ ہو تو چندہ دینے والے سے اجازت لیکر دوسری مسجد میں مذکورہ رقم صرف کرنے کی گنجائش ہے ،اور اگر چندہ دینے والے سے اجازت لینا ممکن نہ ہو یا وہ اجازت نہ دیں تو پھر بچ جانے والی رقم کو دوسری مسجد کی تعمیری کام میں لگانا درست نہیں ہے،بلکہ آئندہ کی ضرورت کے لیے اس چندے کو محفوظ رکھا جائے۔

عبارت ملاحظہ فرمائیں :
الوكيل إنما يستفيد التصرف من الموكل وقد أمره بالدفع إلى فلان فلا يملك الدفع إلى غيره كما لو أوصى لزيد بكذا ليس للوصي الدفع إلى غيره، فتأمل.(رد المحتار على الدر المختار١٨٩/٣،كتاب الزكاة،دارعالم الکتاب الریاض)إعلاء السنن ٣٣٢/١٥،التوكبل بحفظ الصدقة وادائها ،ادارة القرآن والعلوم الاسلامية كراتشي)

فإن شرائط الواقف معتبرة إذا لم تخالف الشرع وهو مالك، فله أن يجعل ماله حيث شاء ما لم يكن معصية وله أن يخص صنفا من الفقراء ولو كان الوضع في كلهم قربة.(رد المحتار على الدر المختار ٥٢٨/٦،کتاب الوقف ،دارعالم الکتاب الریاض)

(اتحد الواقف والجهة وقل مرسوم بعض الموقوف عليه) بسبب خراب وقف أحدهما (جاز للحاكم أن يصرف من فاضل الوقف الآخر عليه) لأنهما حينئذ كشيء واحد.(وإن اختلف أحدهما) بأن بنى رجلان مسجدين أو رجل مسجدًا ومدرسة ووقف عليهما أوقافا (لا) يجوز له ذلك.”.(رد المحتار على الدر المختار ٥٥١/٦،کتاب الوقف ،دارعالم الکتاب الریاض)

على أنهم صرحوا بأن مراعاة غرض الواقفين واجبة.(رد المحتار على الدر المختار ٦٢٥/٦،کتاب الوقف ،دارعالم الکتاب الریاض)کتاب النوازل ٤٦٧/١٣،آدابِ مساجد) فتاویٰ دارالعلوم دیوبند ٤٤٦/١٣تا۴۴۷،وقف کا بیان ،دارالاشاعت کراچی)جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن فتوی نمبر:١٤٤٣٠٧١٠١٠٢٨)(دار الافتاء دارالعلوم دیوبند جواب نمبر:١٧٧١٥٢/جواب نمبر:١٥٧٦٦٢)

واللہ اعلم بالصواب
محمد امیر الدین حنفی دیوبندی
احمد نگر ہوجائی آسام
منتظم المسائل الشرعیۃ الحنفیۃ الہند
١٤،رجب المرجب ١٤٤٤ھ م ۶ فروری ۲۰۲۳ء بروز پیر

تائید کنندگان
مفتی محمد زبیر بجنوری غفرلہ
مفتی شہاب الدین القاسمی غفرلہ
مفتی مرغوب الرحمن القاسمی غفرلہ
مفتی اویس احمد القاسمی غفرلہ

مفتی مختار حسین الحسینی

Print Friendly, PDF & Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے